عقیدہ ختم نبوت کا تحفظ ہرحال میں کرینگے،اکرام الحق

رستم (نمائندہ کسوٹی)عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت ضلع مردان کے زیر اہتمام 10 اکتوبر کو مردان میں تحفظ ختم نبوت کانفرنس کو کامیاب بنانے اور زیادہ سے زیادہ عوامی قوت کو شرکت کیلئے یونین کونسل مچی تحصیل رستم میں ایک کانفرنس کا انعقاد کیا گیا، عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت ضلع مردان کے امیر مولانا قاری اکرام الحق ، مولانا قاری نوراللہ ، مفتی رسال ، مولانا مبارک احمد حقانی ، مفتی نہاد حسین ، حافظ رفیق احمد اور دیگر مقررین کا کہنا تھا کہ ہمارا تعلق کسی بھی سیاسی یا مذہبی جماعت سے ہو وہ ختم نبوت کا داعی ہے، قادیانی اسلام اور وطن کے غدار ہیں، ناموس رسالت کے قوانین پر عملدرآمد کرانا حکمرانوں کی آئینی ذمہ داری ہے ان قوانین میں کسی قسم کی تبدیلی برداشت نہیں کی جائے گی۔ 1974 کو مولانا مفتی محمود کی قیادت میں پاکستان کی پارلیمنٹ نے منکرین ختم نبوت کے خلاف تاریخ ساز فیصلہ دیا تھا کہ قادیانی دائرہ اسلام سے خارج ہیں ، انہوں نے کہا کہ قادیانیت کا تعاقب کرکے پاکستان قادیانیوں اور قادیانی نوازوں کے لئے تنگ کردیں گے، ختم نبوت اسلام کی بنیاد اور عقیدہ ختم نبوت کا تحفظ صحابہ کرام کی سنت ہے۔ مسلمانوں کو قادیانیوں سے ہر قسم کے تعلقات کا بائیکاٹ کرنا چاہیئے۔ حضرت محمد ۖ خاتم النبین ہے اور اس کے بعد پیغمبری کا دعوہ کرنے والا لعنتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر حکومت نے قادیانیوں کو دائرے اسلام سے خارج کرنے کے حوالے سے قانون میں ترمیم پیش کی تو اپنے من تن کی قربانی سے دریغ نہیں کرینگے اور ملک گیر احتجاج تحریک چلائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں اسلامی نظام کے نفاذ کے لئے وہ اپنی جدوجہد جاری رکھیں گے۔